ایم سی کو ٹیکس لینے سے روکنا کراچی کی ایک بڑی کامیابی ہے، حافظ نعیم الرحمٰن

امیر جماعتِ اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا ہے کہ جج کا کے ایم سی کو ٹیکس لینے سے روکنا کراچی کی ایک بڑی کامیابی ہے۔

امیر جماعتِ اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن نے عوامی ریفرنڈم چھٹے اور آخری روز مکمل ہونے نتائج اور آئندہ کے لائحہ عمل کے حوالے سے ادارہ نور الحق میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کی رائے کے مطابق عوام کو کے الیکٹرک نہیں چاہئے لوگ اسکا لائسنز کینسل کروانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج ریفرنڈم کا آخری دن ہے تو عوام  بڑھ چڑھ اپنے رائے دے اور ہم عوام کی رائے عدالت کے سامنے پیش کریں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مرتضیٰ وہاب نے عدالت کے فیصلے پر غلط فہمی پیدا کی ہے جبکہ تمام بلدیاتی ادارے انکے قبضے میں ہیں۔

حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ مرتضی وہاب تین ارب روپوں کے لئے آنسو بہا رہے ہیں یہ بتائیں کہ بل بورڈز کے جو پیسے آتے ہیں وہ کہاں ہیں اور موٹر وہیکل ٹیکس صوبائی حکومت لیتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مرتضیٰ وہاب جس اختیار کا رونا رو رہے ہیں وہ ان کی پارٹی ہی کھا رہی ہے اور تمام بلدیاتی ادارے انکے قبضے میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اب کراچی کے سارے فیصلے کراچی کے منتخب میئر کو کرنے چائیے۔

انہوں نے بتایا کہ کراچی میں الیکشن کروانے سے مراد علی شاہ کیسے روک سکے ہیں جبکہ یہ الیکشن مزاق نہیں ہیں یہ ہماری زندگی کا مسئلہ ہے اور الیکشن کے اگے بڑھنے کا کوئی جواز نہیں ہے۔

Best Health Insurance Battle Creek

Leave a Comment